بریکنگ نیوز

گو جر خان میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ18روزانہ گھنٹے تک جا پہنچا

Load shedding
گو جر خان (نمائندہ راول نیوز)گو جر خان میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ18روزانہ گھنٹے تک جا پہنچا۔ اور مسلسل چار چار گھنٹے تک بجلی بند رکھی جا رہی ہے ۔ یو پی ایس اور چھوٹے جنریٹرز نے کام کرنا چھوڑ دیا۔ شہر کے کچھ علاقوں میں 48گھنٹے بعد بجلی بحال ہو سکی بجلی ، ایکسئین، ایس ڈی او اور کمپلینٹ آ فس کے فون نمبرز بند کر دئے گئے۔ تفصیلات کے مطابق جی ٹی ورڈ کے کنارے بڑکی کے علاقے میں پیر کی رات بجلی بند ہوئی جو48گھنٹے بعد بحال ہو سکی۔ جسکے خلاف نو جوانوں نے آئیسکو کے خلاف مظاہرہ کیا۔ انہوں نے ممبران اسمبلی اور آئیسکو کے مقامی افسران کے خلاف زبر دست نعرے بازی کی۔ انہوں نے واپڈا گو جر خان کے یونین راہنما عادل کے خلاف بھی نعرے بازی کی اور کہا کہ یونین کے عہدیداروں کے کہنے پر ہمارا ٹرانسفارمر کہیں اور نصب کر دیا گیا۔ اور ہمار ٹرانسفار مر جان بوجھ کر خرابی کے بہانے اتارا گیا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ24گھنٹوں سے ہمارے بچے گرمی اور حبس سے بلک رہے ہیں۔ پانی ہے نہ ہوا اور وضو اور دیگر ضروریات کے لیے بھی پانی دستیاب نہیں ہے۔ ادھر بجل؛ی کی لوڈ شیڈنگ میں بے انتہا اضافہ پر شہریوں نے شدید احتجاج کیا ہے اور کہا ہے کہ گو جر خان کے عوام گرمی سے مر رہے ہیں اور ہمارے لیڈر جاوید اخلاص اور شوکت بھٹی لندن کی سیریں کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جاوید اخلاص بتائیں کہ انکی نام نہاد واپڈا کمیٹی کہاں گئی۔ ادھر پی ٹی آئی کے راہنما جاوید کوثر نے گو جر خان میں24گھنٹے تک بجلی کی مسلسل بندش اور لوڈ شیڈنگ میں زبردست اضافہ پر شدید احتجاج کیا ہے اور کہا ہے کہ کمیٹیوں کے نام پر لوگوں کو بیو قوف بنا یا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یوم آ زادی کے دنوں میں لوگوں کو اذیت میں مبتلا کرنا مو جو دہ حکمرانوں کو ہی وطیرہ ہے۔ ادھر ریڈی میڈ گارمنٹس کا اجلاس زیر صدارت احتشام الطاف منعقد ہوا جس میں بجلی کی فورس لوڈ شیڈنگ کے خلاف پرزور احتجاج کیا گیا مقررین نے کہا کہ محکمہ واپڈا نے شہریوں کا جینا بھر کر دیا ہے جس کی وجہ سے تمام کاروباری سخت پریشان ہیں اگر واپڈا حکمرانوں نے اپنا قبلہ درست نہ کیا تو تمام شہراحتجاج پر مجبور ہو جائے گا اور ان کو سنبھالنا مشکل ہو جائے گا فوراً معمول کے مطابق لوڈشیڈنگ کریں اس اجلاس سے چیئرمین محمد ریاض سیٹھی ، سر پرست اعلیٰ محمد صغیر ، سینئر نائب صدر راجہ سرفراز ، رضا شاہ پہلوی ، راجہ خرم شہزاد ، مرزا عدیل احمد ، نائب صدر ، راجہ بلال ، توقیر مغل ، چاند اکرم نے خطاب کیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*